ہفتہ , 21 اکتوبر 2017

Home » تحقیق و جستجو » ابن بطوطہ

ابن بطوطہ

عرب سیاح ابن بطوطہ کے نام سے کون ناواقف ہوگا؟ سب سے عظیم اور شاید پہلے سیاح ابن بطوطہ تھے۔ہم ان کے بارے میں جو کچھ جانتے ہیں وه ان کی سوانح حیات سے جانتے ہیں جو انهوں نے اپنے سفر کی داستان کو بیان کرنے کے لیے خود تحریر کیں۔
ان کی پیدائش ۱۳۰۴ء میں مراکش کے شہر طنجہ میں هوئی تهی. ان کا ابوعبداللہ محمد ابن بطوطہ مکمل نام تها۔ ادب، تاریخ، اور جغرافیہ کی تعلیم حاصل کرنے کے بعد اکیس سال کی عمر میں پہلا حج کیا۔
وہ تیر ھویں صدی کے سیاح اور سفرنامہ نگار تهے۔ انھوں نے اپنے سفر کی شروعات بیت الله کے حج سے کیں اور ان کا یہ سفر چھ مہینے کا تها مگر ان کے شوقِ سفر نے انهیں دنیا دیکهنے کے لیے اتنا مجبور کیا کہ و ہ چوبیس سالوں تک اپنے آبائی ملک کی شکل تک نہ دیکھ سکے۔ چار بار حج بیت اللہ سے مشرف هوئے۔
حفاظت کے خیال سے وه عام طور پر قافلوں کے ساتھ سفر کرتے تهے۔ اسکندریہ میں ان کا سامنا ایک پرھیزگار بزرگ سے ہوا جنھوں نے ان کی فطرت سمجھ کے انھیں ان کے بھائی کے پاس ہندوستان اور چین جانے کا مشوره دیا۔
محمد تغلق کے عہد میں ہندوستان آیا تھا۔ سلطان نے اُس کی بڑی آؤ بھگت کی اور قاضی کے عہدے پر سرفراز کیا۔ یہیں سے ایک سفارتی مشن پر چین جانے کا حکم ملا۔ ۲۸ سال کی مدت میں اس نے ۷۵ہزار میل کاسفر کیا۔ آخر میں فارس کے بادشاہ ابوحنان کی دربار میں آیا۔ اور اس کے کہنے پر اپنے سفر نامے کو کتابی شکل دی۔ اس کتاب کا نام عجائب الاسفارنی غرائب الدیارہے۔ یہ کتاب مختلف ممالک کے تاریخی و جغرافیائی حالات کا مجموعہ ہے۔
انھوں نے اس وقت کے تمام مسلم ممالک اور دوسرے غیر مسلم ملکوں کی سیر کیں اور ہر ملک یا شہر کے ساتھ ان کے ساتھ کوئی نہ کوئی خاص واقعہ جرا ہوا ہے۔ انھوں نے اپنی ایک کتاب رحلہ ۱۳۵۵ ء میں مکمل کیں اپنی کتاب کث مکمل کرنے کے بعد وہ دوبارہ اپنے ملک مراکش چلیں گئے اور قاضی کے عہدے پر فائز ہوئے. اور اپنے اًبائی ملک مراکش میں ۱۳۶۹ ء میں وفات پائے۔

ابن بطوطہ Reviewed by on . عرب سیاح ابن بطوطہ کے نام سے کون ناواقف ہوگا؟ سب سے عظیم اور شاید پہلے سیاح ابن بطوطہ تھے۔ہم ان کے بارے میں جو کچھ جانتے ہیں وه ان کی سوانح حیات سے جانتے ہیں جو عرب سیاح ابن بطوطہ کے نام سے کون ناواقف ہوگا؟ سب سے عظیم اور شاید پہلے سیاح ابن بطوطہ تھے۔ہم ان کے بارے میں جو کچھ جانتے ہیں وه ان کی سوانح حیات سے جانتے ہیں جو Rating:
scroll to top