بدھ , 22 نومبر 2017

Home » تازہ ترین » اسپین کی ایلیسانٹے یونیورسٹی کی ایک حیرت انگیز تحقیق:

اسپین کی ایلیسانٹے یونیورسٹی کی ایک حیرت انگیز تحقیق:

اسپین کی ایلیسانٹے یونیورسٹی کی ایک تحقیق میں بتایا گیا کہ پیدائش کا مہینہ انسان کی صحت پر بہت زیادہ اثر انداز ہوتا ہے۔ تحقیق کے مطابق پیدائش کے مہینے میں اور اچھے موڈ والے ہارمونز سمیت ڈوپامن، اور سیروٹن جیسے ہارمون کے مابین گہرا تعلق پایا جاتا ہے۔ یہاں آپ کو پدائش کے مہینے سے متعلق ہونے والی بیماریوں کے بارے میں بتایا جارہا ہے۔
٭ جنوری :
سردیوں میں پیدا ہونے والے افراد میں دیگر لوگوں سے زیادہ غصہ اور تنک مزاجی پائی جاتی ہے۔ جنوری میں پیدا ہونے والے السر، قبض، مردوں میں کمر کا درد، ہارٹ اٹیک ، مائگرین اور خواتین کے مخصوص ایام میں مسائل پائے جاتے ہیں۔
٭ فروری:
فروری میں پیدا ہونے والے افراد میں تھائرائڈ گلانڈ، جوڑوں کے امراض، مردوں میں دل کی بیماریاں اور خواتین میں شریانوں میں خون کے جمنے کی شکایات پائی جاتی ہیں۔
٭ مارچ:
موسم بہار میں پیدا ہونے والے لوگ شدید جذباتی ہوتی ہے۔ یہ لوگ ہمیشہ اچھے موڈ میں رہتے ہیں۔ مارچ میں پیدا ہونے والے افراد میں استھما، موتیا بند اور دل کی بیماریاں زیادہ جنم لیتی ہیں جبکہ خواتین میں قبض، گٹھیا اور جوڑوں کے درد کی شکایات پائی جاتی ہیں۔
٭ اپریل :
اپریل میں پیدا ہونے والے مردوں میں تھائرائیڈ گلانڈ کے مسائل، استھما اور ہڈیوں کی بڑھتی ہوئی سختی یعنی تصلب العظام کی شکایات ہوتی ہیں جبکہ خواتین میں برونکائٹس، ٹیومرز اور تصلب العظام جیسی بیماریاں جنم لیتی ہیں۔
٭ مئی :
مئی کا مہینہ مردوں میں استھما، یاسیت اور ذیابیطس جبکہ خواتین میں تصلب العظام قبض اور دائمی الرجیوں کا سبب بنتا ہے۔
٭ جون:
جون میں پیدا ہونے والے لوگوں کا موڈ بہت جلد بدلتا ہے۔ اس مہینے میں پیدا پونے والے مرد موتیا بند، گلے کے دائمی مسائل اور دل کی بیماریوں کا شکار ہوتے ہیں۔ جبکہ خواتین میں مثانے کی کمزوری، جوڑوں کے درد اور گٹھیا کے مسائل پائے جاتے ہیں۔
٭ جولائی:
جولائی میں پیدا ہونے والے افراد استھما، گٹھیا ٹیومرز اور گردن کی دائمی تکلیف میں مبتا ہوتے ہیں۔
٭ اگست:
اگست میں پیدا ہونے والے مرد تصلب العظام، استھما، اور تھائرائیڈ گلانڈ جبکہ خواتین جوڑوں کے درد، گٹھیا اور شریانوں میں خون کے جمنے کے مسائل کا شکار ہوتے ہیں۔
٭ ستمبر:
خزاں میں پیدا ہونے لوگ عام طور پر گرم دماغ اور مشتعل مزاج ہوتے ہیں۔ ایسے لوگوں میں شریانوں میں خون کے جمنے اور تھائرائیڈ گلانڈ کی شکایات ہوتی ہیں۔ جبکہ مردوں میں استھما اور خواتین میں ٹیومرز ہو سکتے ہیں۔ ستمبر میں پیدا ہونے والے افراد میں کسی بھی دائمی مرض کا شکار ہونے کے چانسز بہت کم ہوتے ہیں۔
٭ اکتوبر :
مرد حضرات کو تھائرائیڈ گلانڈ کے مسائل اور مائگرین جبکہ خواتین کو انیمیا اور ہائی لیول کولیسٹرول کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ جبکہ دونوں تصلب العظام کا شکار ہوتے ہیں۔
٭ نومبر :
نومبر میں پیدا ہونے والے مردوں کو دائمی جلدی بیماریوں، دل اوت تھائرائیڈ گلانڈ کے مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ جبکہ خواتین کو ہارٹ اٹیک، قبض اور شریانوں کے بڑھنے کی شکایات ہو سکتی ہیں۔
٭ دسمبر:
سال کے آخری مہینے میں پیدا ہونے والے مردوں میں موتیا بند، ڈپریشن اور دل کی بیماریاں پائی جاسکتی ہیں جبکہ خواتین استھما، شریونوں میں خون کے جمنے اور دائمی پھیپھڑوں کی سوجن میں مبتلا ہوسکتی ہیں۔

اسپین کی ایلیسانٹے یونیورسٹی کی ایک حیرت انگیز تحقیق: Reviewed by on . اسپین کی ایلیسانٹے یونیورسٹی کی ایک تحقیق میں بتایا گیا کہ پیدائش کا مہینہ انسان کی صحت پر بہت زیادہ اثر انداز ہوتا ہے۔ تحقیق کے مطابق پیدائش کے مہینے میں اور ا اسپین کی ایلیسانٹے یونیورسٹی کی ایک تحقیق میں بتایا گیا کہ پیدائش کا مہینہ انسان کی صحت پر بہت زیادہ اثر انداز ہوتا ہے۔ تحقیق کے مطابق پیدائش کے مہینے میں اور ا Rating: 0

Leave a Comment

scroll to top