اتوار , 23 جولائی 2017

Home » تازہ ترین » جانئے گزشتہ 54 برس سے غاروں میں رہنے والے چینی جوڑے کی کہانی:

جانئے گزشتہ 54 برس سے غاروں میں رہنے والے چینی جوڑے کی کہانی:

81 سالہ لیانگ زیفو اور 77 سالہ لی سویِنگ کی جب شادی ہوئی تو ان کی مالی حالت اتنی خراب تھی کہ وہ کرائے کے گھر کے اخراجات بھی برداشت نہیں کرسکتے تھے۔ اس کے بعد انہوں نے ایک غار کا انتخاب کیا اور وہیں رہنے کا فیصلہ کیا۔ اس غار میں 3 خاندان پہلے ہی مقیم تھے لیکن وہ حالات بہتر ہوتے ہی یہاں سے چلے گئے مگر اس جوڑے نے یہیں سکونت اختیار کرلی۔سوشل میڈیا پر ان کی دلچسپ کہانی کا چرچا ہوا تو کئی مقامی اداروں نے بوڑھے شوہر اور بیوی کو کسی دوسری جگہ رہائش کی پیشکش کی مگر انہوں نے انکار کردیا۔جوڑے نے غار میں 3 بیڈ روم، ایک باورچی خانہ اور ایک بڑا کمرہ بنایا ہے۔ غار کی چھت کو انہوں نے ایک باغیچے میں بدل دیا ہے جہاں سے وہ ضروری سبزیاں حاصل کرتے ہیں اور سوروں کا باڑہ بنایا ہے جہاں سے وہ تازہ گوشت حاصل کرتے ہیں۔ اس کےعلاوہ غار میں صاف پانی کی فراہمی کو بھی یقینی بنایا ہے جب کہ بڑی کوشش کے بعد وہ غار میں بجلی بھی لے آئے ہیں اور زندگی آسان بنادی ہے۔ان کے مطابق یہ غار گرمیوں میں سرد اور سردیوں میں گرم رہتا ہے۔ تاہم ان کے 4 بچے بڑے ہوکر غار سے جاچکے ہیں اور اب وہ دوبارہ تنہا رہ گئے ہیں۔ سوشل میڈیا پر بعض افراد نے ان کی صحت پر فکرمندی ظاہر کی ہے۔ کچھ نے کہا ہے کہ وہ غار میں رہ کر چینی شہروں کی تیز رفتار زندگی سے دور پرسکون انداز میں رہ رہے ہیں جو ان کا حق ہے۔

جانئے گزشتہ 54 برس سے غاروں میں رہنے والے چینی جوڑے کی کہانی: Reviewed by on . 81 سالہ لیانگ زیفو اور 77 سالہ لی سویِنگ کی جب شادی ہوئی تو ان کی مالی حالت اتنی خراب تھی کہ وہ کرائے کے گھر کے اخراجات بھی برداشت نہیں کرسکتے تھے۔ اس کے بعد ان 81 سالہ لیانگ زیفو اور 77 سالہ لی سویِنگ کی جب شادی ہوئی تو ان کی مالی حالت اتنی خراب تھی کہ وہ کرائے کے گھر کے اخراجات بھی برداشت نہیں کرسکتے تھے۔ اس کے بعد ان Rating: 0

Leave a Comment

scroll to top