پیر , 24 جولائی 2017

Home » اہم » سعودی مفتی اعظم علالت کے باعث اس سال حج کا خطبہ نہیں دینگے

سعودی مفتی اعظم علالت کے باعث اس سال حج کا خطبہ نہیں دینگے

سعودی عرب کے مفتی اعظم شیخ عبدالعزیزآل شیخ ٣٥ سال سے یوم عرفہ کے موقع پر مسجد نمرہ سے خطبہ حج دے رہے ہیں تاہم اس سال انہوں نے خرابی صحت کے باعث خطبہ حج دینے سے معذرت کرلی ہے جس کے بعد اب الشیخ صالح بن حمید خطبہ حج دیں گے۔مفتی اعظم سعودی عرب ١٩٨١ سے مسلسل خطبہ حج کے فرائض سرانجام دے رہے ہیں جنہیں ١٩٩٩ میں شیخ عبدالعزیز بن باز کے انتقال کے بعد مفتی اعظم کی ذمہ داریاں سونپی گئی ہیں جب کہ مفتی اعظم سعودی عرب کی عالم دین کونسل اور افتا کونسل کے چیرمین بھی ہیں۔
یاد رہے کہ حال ہی میں عبدالعزیز الشیخ نےایک متنازع بیان دیا تھا جس میں انھوں نے ایرانیوں کے مسلمان ہونے پر سوال اٹھایا تھا۔ ان کا یہ بیان ایران کے روحانی پیشوا آیت اللہ علی خامنہ ای کی جانب سے سعودی عرب کو حج کے انتظامات کے حوالے سے شدید تنقید کے جواب میں آیا تھا۔گذشتہ برس حج کے دوران بھگدڑ مچنے سے ایرانیوں سمیت سینکڑوں حجاج کی ہلاکت کے بعد بھی آیت اللہ علی خامنہ ای نےتجویز دی تھی کہ مسلمان ممالک حج پر سعودی اختیار کو ختم کرنے کے بارے میں سوچیں۔دونوں ممالک کے درمیان اس سال حج کے انتظامات کے سلسلے میں مذاکرات کامیاب نہیں ہو سکے جس کی وجہ سے ایرانی شہری اس مرتبہ حج نہیں کر سکیں گے۔

سعودی مفتی اعظم علالت کے باعث اس سال حج کا خطبہ نہیں دینگے Reviewed by on . سعودی عرب کے مفتی اعظم شیخ عبدالعزیزآل شیخ ٣٥ سال سے یوم عرفہ کے موقع پر مسجد نمرہ سے خطبہ حج دے رہے ہیں تاہم اس سال انہوں نے خرابی صحت کے باعث خطبہ حج دینے سے سعودی عرب کے مفتی اعظم شیخ عبدالعزیزآل شیخ ٣٥ سال سے یوم عرفہ کے موقع پر مسجد نمرہ سے خطبہ حج دے رہے ہیں تاہم اس سال انہوں نے خرابی صحت کے باعث خطبہ حج دینے سے Rating: 0

Leave a Comment

scroll to top