جمعرات , 27 جولائی 2017

Home » تحقیق و جستجو » مخلوط معیارِ تعلیم

مخلوط معیارِ تعلیم

پاکستان میں زیادہ تر تعلیمی ادارے مخلوط ہیں۔ جو مخلوط نہیں ہے ان کا معیارِ تعلیم زیاوہ بلند نہیں۔ زیادہ تر نجی تعلیمی ادارے مخلوط تعلیمی نظام پر مشتمل ہیں۔ ہمیں اکیسویں صدی میں داخل ہوئے ۱۴ سال ہوگئے ہیں. جہاں وقت کے ساتھ ساتھ دوسرے شعبوں میں ترقی ہوئی ہیں وہاں مخلوط تعلیمی نظام آج کے وقت کی ضرورت بن گیا ہے۔ پاکستان جیسا غریب ملک ایک ساتھ لڑکے اور لڑکیوں کے لیے الگ اعلیٰ نظامِ تعلیم کا بندوبست نہیں کرسکتا۔ بے شک یہ ایک سچائی ہے کہ مخلوط تعلیمی نظام ہمارے مذہب اور ثقافت کا حصہ نہیں ہے مگر آج کے دور میں ہر دوسرا بہترین تعلیمی اداره مخلوط ہے۔ جہاں اس میں بہت سی برائیاں وهاں اس میں بھت سی خوبیاں بھی ہیں۔
ہر پیشہ ور انسان چاہے وه مرد ہو یا عورت اپنی پیشہ ورانہ زندگی میں اپنی مخالف جنس کا سامنا کرتا ہے یہ ایک ایسی حقیقت ہے جسے کوئی جھٹلا نہیں سکا ۔ لہٰذا ایسے انسان جنھوں نے اپنی تعلیم یک-جنسی تعلیمی ادارے سے حاصل کی هوئی ہو۔ وہ لوگ اپنی پیشہ ورانہ زندگی میں اپنی مخالف جنس کا سامنا کرتے ہوئے جھجھکتے ہیں یہ مسئلہ عورتوں میں زیادہ ہوتا ہے۔
اس کے مقابلے میں مخلوط تعلیمی اداروں سے نکلنے والے طالبلعلم اپنی پیشہ ورانہ زندگی میں زیادہ خوداعتماد ہوتے ہیں ۔ یہ بھی دیکھا گیا ہے کہ مخلوط تعلیمی اداروں سے پڑھنے والے لڑکے اپنی ساتھی لڑکیوں کی زیادہ عزت کرتے ہیں بمقابلہ دوسروں کے۔
دیکھا یہ بھی گیا ھے کہ مخلوط تعلیمی اداروں میں بےحیائی کا رواج پایا جاتا ہے مگر ہر ادارے میں ایسا نھیں ھوتا ۔ کئی بہترین ادارے ایسے بهی ہے جو طالبات اور طلباء کی طرف خصوصی توجه دیتے ہیں اور کسی بهی غلط واقعہ کا فوراً نوٹس لیا جاتا ھے۔ بےشک مخلوط تعلیمی اداروں میں بہت سی برائیاں ہے مگر اس بات سے انکار بھی نھیں کبا جاسکتا ہے کہ یہ نہ صرف حالیہ وقت کی ضرورت ہے بلکہ اسے مجبوری کہا جائے تو زیادہ بھتر ہوگا کیونکہ ملک کے تمام بھترین ادارے چند ایک کو چھوڑ کر مخلوط ہے اور اس کے ساتھ یہ سچائی بھی ہے کہ یک- جنسی تعلیمی ادارے میں بھی وه ساری برائیاں ہوتی ہے جو ایک مخلوط تعلیمی اداروں میں پائی جاتی ہے یہ ہم خود ہے جو اس برائیوں کو اپناتے ہیں یا نھیں ۔ بے شک اکیسویں صدی میں رہتے ہوئے مخلوط تعلیمی نظام کی اهمیت سے انکار نہیں کیا جاسکتا۔

مخلوط معیارِ تعلیم Reviewed by on . پاکستان میں زیادہ تر تعلیمی ادارے مخلوط ہیں۔ جو مخلوط نہیں ہے ان کا معیارِ تعلیم زیاوہ بلند نہیں۔ زیادہ تر نجی تعلیمی ادارے مخلوط تعلیمی نظام پر مشتمل ہیں۔ ہمیں پاکستان میں زیادہ تر تعلیمی ادارے مخلوط ہیں۔ جو مخلوط نہیں ہے ان کا معیارِ تعلیم زیاوہ بلند نہیں۔ زیادہ تر نجی تعلیمی ادارے مخلوط تعلیمی نظام پر مشتمل ہیں۔ ہمیں Rating:
scroll to top