پیر , 23 اکتوبر 2017

Home » اہم » پیارے بھارت، ان حماقتوں کے ساتھ مستقل رکنیت نہیں ملنی:

پیارے بھارت، ان حماقتوں کے ساتھ مستقل رکنیت نہیں ملنی:

جس طرح شیطانی قوتیں جھوٹ اور خوف کی بنیاد پر اپنے ناجائز مفادات حاصل کرنے کے لیے کام کرتی ہیں بالکل اسی طرز پر بھارت بھی اپنی سی کوشش جاری رکھے ہوئے ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں ہر پندرہ لوگوں پر موجود ایک بھارتی فوجی، بھارت کے سب سے بڑے جمہوری ملک ہونے کے خود ساختہ دعوے پر ایک سوالیہ نشان ہے تو دوسری طرف بھارتی فوج کی قابلیت پر بھی ایک بدنما داغ ہے۔ اس کٹھن وقت میں بوکھلائے بھارت کی ہر تدبیر الٹی اسی کے گلے پڑتی نظر آتی ہے۔ بھارت نے نہتے کشمیریوں پر ڈھائے گئے مظالم عالمی سطح پر دبانے کے لیے مدعا پاکستان پر ڈالنے کی سرتوڑ کوشش کی۔ جب عالمی دنیا میں بھارت کی یہ پھکی نہ بک سکی تو اس نے اڑی حملے کا ڈھونگ رچا دیا جس کا فائدہ بھی اسے کچھ نہ ہوا۔ البتہ بھارت کی پالیسی کہ “جھوٹ اتنا بولا جائے کہ لوگ جھوٹ کو ہی سچ سمجھنے لگیں” الٹا اسی کے گلے پڑگئی ہے۔ بیچارے بھارتی اپنے ہی میڈیا کی باتوں میں آ گئے اور بھارت کو سپرپاور سمجھنے لگے۔ مگر بھارتی فوج کو تو اچھی طرح معلوم ہے کہ وہ کتنے پانی میں ہے۔ پھر ہوا یوں کہ بھارت خالی ڈھول کی طرح بجنے لگا۔ پہلے پاکستان کو عالمی دنیا میں تنہا کرنے کی دھمکی دی جس پر اسے منہ کی کھانا پڑی اور پھر پاکستان کو پانی بند کرنے کی دھمکی دے کر چین کو اپنا ہی پانی بند کرنے کا جواز دے بیٹھا۔
دوسری طرف بھارتی میڈیا اور شہری تو بضد ہیں کہ سرجیکل سٹرائیک کی بڑھکیں مار رہے تھے، اب تو ہمیں کر کے دکھاؤ۔ پھر بھارتی بڑوں نے یہ فیصلہ کیا کہ میڈیا پر ہی بھارتی فوج سپر پاور ہے تو وہیں سرجیکل سٹرائیک کا دعوی کر کے بھارتی قوم کو چھنکنا دے دیتے ہیں۔ کیونکہ انہیں بخوبی اندازہ ہے کہ اگر بھرتی فوج نے اصل میں سرجیکل سٹرائیک کی کوشش بھی کی تو عالمی دنیا میں تو دور کی بات وہ اپنے ملک میں بھی کسی کو منہ دکھانے کے قبل نہیں رہے گا۔
دوسری جانب بان کے مون نے بھی یہ اعتراف کیا ہے کہ اقوام متحدہ بھارت کے رویے سے تنگ ہے اور اسے مقبوضہ کشمیر میں رسائی نہیں دی جارہی جبکہ آزاد کشمیر میں اقوام متحدہ کا مشن آزادی کے ساتھ کام کر رہا ہے۔ اسی کمیشن نے آزاد کشمیر میں کسی بھی قسم کی سرجیکل سٹرائیک کی تردید بھی کی ہے۔ بھارت کے جھوٹ اور اس کی مذموم حرکتوں سے اقوام متحدہ جان چکی ہے کہ بھارت اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا مستقل رکن بننے کے ابھی قبل نہں ہوا۔ اب بھارت کو چاہیے کہ جھوٹ بولنا بند کرے اور خوابی خیالی دنیا سے نکل کر حقیقی دنیا میں آجائے۔

پیارے بھارت، ان حماقتوں کے ساتھ مستقل رکنیت نہیں ملنی: Reviewed by on . جس طرح شیطانی قوتیں جھوٹ اور خوف کی بنیاد پر اپنے ناجائز مفادات حاصل کرنے کے لیے کام کرتی ہیں بالکل اسی طرز پر بھارت بھی اپنی سی کوشش جاری رکھے ہوئے ہے۔ مقبوضہ جس طرح شیطانی قوتیں جھوٹ اور خوف کی بنیاد پر اپنے ناجائز مفادات حاصل کرنے کے لیے کام کرتی ہیں بالکل اسی طرز پر بھارت بھی اپنی سی کوشش جاری رکھے ہوئے ہے۔ مقبوضہ Rating: 0

Leave a Comment

scroll to top