جمعہ , 21 جولائی 2017

Home » اہم » پی۔آئی۔ اے کی نجکاری آخر کیوں:

پی۔آئی۔ اے کی نجکاری آخر کیوں:

پاکستان کی قومی ایئر لائین پی آئی اے جو پچھلے کئی سالوں سے مسلسل مالی بحران کا شکار ہے۔ اب حالیہ حکومتی موقف نے پی آئی اے ملازمین میں تفتیش کی لہر پیدا کر دی ہے۔حکومتی اعلامیہ میں پی آئی اے کے بارے میں کہا گیا ہے کہ حکومت اس نقصان میں چلنے والے اہم قومی ادارے کے 26 فیصد حصص کو اصلاحاتی عمل سے گزرنے کے بعد نجی شعبے کے حوالے کرنا چاہتی ہے۔ یاد رہے کہ پی آئی اے کے ملازمین اور حزب اختلاف کی بڑی جماعت پاکستان پیپلز پارٹی کے احتجاج کے بعد حکومت نے اعلان کیا تھا کہ وہ پی آئی اے کی نجکاری نہیں کرے گی لیکن حکومت اپنے ہی بیان کی نفی کر کے ملازمین کی مشکلات میں اضافہ کر رہی ہے۔ اس حکومتی فیصلہ کے بعد پی آئی اے ایکشن کمیٹی نے پاکستان کی قومی ایئر لائن کی نجکاری کے خلاف ہڑتال
اور فضائی آپریشنز بند کرنے کا اعلان کر دیا ۔جس کے ردعمل میں حکومت نے لازمی سروس ایکٹ 1952 کے نفاذ کا فیصلہ کیا۔ اس اقدام کے بعد ہڑتالی ملازمین اور سکیورٹی اہلکاروں کے درمیان ایئرپورٹ پر ہونے والی جھڑپ، جس میں دو ملازمین افسوسناک طور پر ہلاک ہوئے۔ ان تمام حالات کے بعد حکومت نے پی آئی اے کی نجکاری ٦ ماہ کے لئیے موخر کرتے ہوئ پی آئی اے ایکشن کمیٹی سے مزاکرات کیے اور مزاکرات کے بعد پی آئی اے ایکشن کمیٹی نے ہڑتال ختم کرنے کا اعلان کر دیا۔ حکومت اور پی آئی اے ملازمین کی اس انا کی جنگ میں ٧٠٠ سے زائد پروازیں اور ہزاروں مسافروں کو اس کا خمیازہ اور قیمت چکانی پڑی مختصر یہ کہ پی آئی اے مالی بحران سے زیادہ کرپشن اور بے ضبتگیوں کا زیادہ شکار رہی ہے۔ ہر دور میں حکومت اپنے من پسند افراد کو ادارے میں بھرتی کرواتی رہی ہے جس کی وجہ سے ادارہ گنجائش سے زیادہ ملازمین کا بوجھ برداشت کرتا رہا ہے جہاں تک کہ اب یہ خسارا ٣٠٠ ارب تک جا پہنچا ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ پی آئی اے کا مالی بحران کا حل ملازمین کی باہمی رضامندی سے حل کیا جائے

پی۔آئی۔ اے کی نجکاری آخر کیوں: Reviewed by on . پاکستان کی قومی ایئر لائین پی آئی اے جو پچھلے کئی سالوں سے مسلسل مالی بحران کا شکار ہے۔ اب حالیہ حکومتی موقف نے پی آئی اے ملازمین میں تفتیش کی لہر پیدا کر دی ہے پاکستان کی قومی ایئر لائین پی آئی اے جو پچھلے کئی سالوں سے مسلسل مالی بحران کا شکار ہے۔ اب حالیہ حکومتی موقف نے پی آئی اے ملازمین میں تفتیش کی لہر پیدا کر دی ہے Rating: 0

Leave a Comment

scroll to top