جمعہ , 20 اکتوبر 2017

Home » تازہ ترین » کراچی کے تعلیمی اداروں کی سیکورٹی کا معاملہ:

کراچی کے تعلیمی اداروں کی سیکورٹی کا معاملہ:

وفاقی حکومت اس مسئلہ پر نوٹس لے اور تعلیمی اداروں کی سیکورٹی کی مونیٹرینگ کا خود کرے۔

سانحہ پشاور کے بعد پاکستان کے تمام تعلیمی اداروں میں دہشت گردی کی صورتحال کے پیش نظر تمام صوبوں کو یہ احکامات جاری کئے گئے تھے کہ وہ اپنے صوبے کے تمام تعلیمی اداروں کے سیکورٹی کے سخت ترین انتظامات کریں۔اگر بات صوبہ سندھ کی کی جائے تو اس صوبے میں کل ملا کر دس ہزار تعلیمی ادارے موجود ہیں۔اگر بات صرف کراچی کی کی جائے تو یہاں تو جیسے حکومت کے احکامات ہواؤں میں اڑا دئیے گئے ہیں، کراچی کے زیادہ تر سرکاری اداروں کے سیکورتی کے اقدامات نہ ہونے کے برابر ہیں نجی اداروں کے سیکورٹی کا تو اللہ ہی حافظ ہے۔اس افسوس ناک صورتحال میں انتظامیہ اور تعلیم کے صوباہی وزیر چین کی نیند سو رہے ہیں۔ان کو یہ تک اندازہ نہیں کہ ان کے اس گفلت سے کتنا بڑا سانحہ رونما ہو سکتا ہے۔ھال ہی میں ایک انٹرویو میں جب یہ سوال وزیراعلی سندھ سے کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس اتنے وسائل نہیں ہیں کہ ہر تعلیمی ادارے کی سیکورٹی کے یقدامات کر سکیں۔وزیراعلی سندھ کے بیان پر عوام کا شدید ردعمل سامنے ٓایا، شہریوں کا کہنا ہے کہ اگر یہ زمہ داری ان ضلعی انتظامیہ کی نہیں ہے تو ان کو وزارت میں بھی نہیں ہونا چاہئے۔ضرورت اس امر کی ہے کہ وفاقی حکومت اس مسئلہ پر نوٹس لے اور تعلیمی اداروں کی سیکورٹی کی مونیٹرینگ کا خود کرے۔

کراچی کے تعلیمی اداروں کی سیکورٹی کا معاملہ: Reviewed by on . سانحہ پشاور کے بعد پاکستان کے تمام تعلیمی اداروں میں دہشت گردی کی صورتحال کے پیش نظر تمام صوبوں کو یہ احکامات جاری کئے گئے تھے کہ وہ اپنے صوبے کے تمام تعلیمی اد سانحہ پشاور کے بعد پاکستان کے تمام تعلیمی اداروں میں دہشت گردی کی صورتحال کے پیش نظر تمام صوبوں کو یہ احکامات جاری کئے گئے تھے کہ وہ اپنے صوبے کے تمام تعلیمی اد Rating: 0

Leave a Comment

scroll to top